76

وزیر اعظم آزاد کشمیرنے لیسوا کے متاثرین کی بحالی کے لئے شاہ غلام قادر کی سربراہی میں اعلیٰ سطحی کمیٹی قائم کردی

مظفرآباد ( اے ایف بی ) وزیر اعظم آزاد کشمیر راجہ محمد فاروق حیدر خان نے کہا ہے کہ وادی نیلم کے علاقے لیسوامیں کلاو¿ڈ برسٹ سے ہونے والے نقصانات کے ازالے کے لیے حکومت کے تمام وسائل حاضر ہیں۔ آئندہ سردیوں سے قبل لوگوں کو ہر صورت چھت فراہم کی جائے گی اس حوالے سے سپیکر قانون ساز اسمبلی شاہ غلام قادر کی سربراہی میں اعلیٰ سطحی کمیٹی قائم کر دی گئی ہے جو 03اگست 2019تک تعمیر نو اور بحالی کا مکمل ورکنگ پلان بنائے گی۔ بے گھر اور بغیر زمین والے گھرانوں کو زمین اور چھت فراہم کریں گے۔ سیلابی ریلے کی وجہ سے بہہ جانے والی لکڑی واپس متاثرین کو تعمیر نو کیلئے فراہم کی جائیگی۔ لوگوں نے زندگی بھر کی جمع پونجی سے صرف مکان تعمیر کیے اور ناگہانی آفت نے چند منٹ میں ختم کر دیے۔ وہ یہاں دورہ لیسوا کے دوران انتظامیہ کی جانب سے دی جانے والی بریفنگ کے موقع پر اظہار خیال کر رہے تھے۔ اس موقع پر وزیر اعظم کے ہمراہ سپیکر قانون ساز اسمبلی شاہ غلام قادر،وزیر سٹیٹ ڈیزاسٹر مینجمنٹ اتھارٹی احمد رضا قادری، سیکرٹریز حکومت،کمشنر مظفرآباد ڈویڑن چوہدری امتیاز احمد، چیئرمین مرکزی زکوة کونسل صاحبزادہ محمد سلیم چشتی، سربراہان محکمہ جات اور ضلعی انتظامیہ بھی موجودتھے۔ سپیکر قانون ساز اسمبلی نے اس موقع پر وزیر اعظم کو لیسوا کے مختلف علاقوں کا دورہ کروایا اور جانی ومالی نقصانات کی تفصیلات سے آگاہ کرتے ہوئے کہا کہ وہ خود وزیر سٹیٹ ڈیزاسٹر مینجمنٹ اتھارٹی سمیت موقع پر پہنچے اور تمام متعلقہ محکمہ جات نے مثالی کام کیاتاہم اب اس مرحلے میں مزید تیزی سے کام کرنا ہے۔ ڈپٹی کمشنر نے وزیر اعظم کو بریفنگ دیتے ہوئے کہا کہ سانحہ لیسوا میں 20لوگ شہید ہوئے جن میں سے10افراد تبلیغی جماعت والے 1راولپنڈی کا رہائشی اور 9مقامی افراد شامل ہیں۔ اس کے علاوہ امدادی اور ریلیف کی سرگرمیوں کے بارے میں تفصیلی بریفنگ دی۔اس موقع پر وزیر اعظم نے کہا کہ قدرتی آفات سے نمٹنے کے لیے آزاد کشمیر بھر میں ارلی وارننگ سسٹم نصب کیا جائے اور ایس ڈی ایم اے اس حوالے سے فوری اقدامات اٹھائے۔ آزاد کشمیر موسمیاتی تبدیلیوں سے سب سے زیادہ متاثر ہورہا ہے ہمیں مستقبل میں اس طرح کے واقعات سے نمٹنے کے لیے ابھی سے منصوبہ بندی کرنی ہے۔ وزیر اعظم نے تمام محکمہ جات کو ہدایت کی کہ وہ ملکر کام کریں اور بین الاقوامی امدادی اداروں کے ساتھ ملکر ایک منظم منصوبہ بندی کے ساتھ کام کریں۔ انہوں نے لوکل گورنمنٹ کو ہدایت کی کہ نالہ پر متاثرہ پلوں کی از سرنو تعمیر جلد شروع کی جائے۔وزیر اعظم نے فلیش فلڈ کے نتیجے میں جاں بحق ہونے والے افراد کے ایصال ثواب کیلئے فاتحہ خوانی کی اور لواحقین سے اظہار تعزیت کیاآخر میں شہدا کے لواحقین میں امدادی چیک بھی تقسیم کیے۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں