58

چوتھا ون ڈے: پاکستان نے انگلینڈ کو 341 رنز کا ہدف دیدیا

لندن: انگلینڈ کے ساتھ پانچ میچوں کی سیریز کے چوتھے ون ڈے میچ میں پاکستان نے انگلینڈ کو 341 رنز کا ہدف دیدیا۔ بابر اعظم نے شاندار سنچری بنائی۔ یہ ان کے کیریئر کی نویں تھری فیگر اننگز تھی۔

انگلینڈ کے کپتان جوز بٹلر نے ٹاس جیت کر پہلے فیلڈنگ کا فیصلہ کیا۔ پاکستان کی طرف سے امام الحق اور فخر زمان نے اننگز کا آغاز کیا ۔ تاہم امام چوتھے اوورز کی دوسری گیند پر انجرڈ ہو کر پویلین واپس چلے گئے۔

گرین شرٹس کے پہلے آئوٹ ہونے والے بیٹسمین فخر زمان تھے جو 57 رنز پر کوران کو وکٹ دے بیٹھے جبکہ دوسری وکٹ محمد حفیظ کی گری جنہوں نے 59 سکور کی باری کھیلی۔ تیسری وکٹ بابر اعظم کی گری جو 115 سکور بنا کر کوران کی گیند پر آرچر کو کیچ دے بیٹھے۔

پاکستان کی چوتھی وکٹ آصف علی کی گری جو 17 رنز بنا کر آرچر کا شکار بن گئے۔ پانچویں کھلاڑی آل رائونڈر عماد وسیم 12 رنز پر کوران کی گیند پر بولڈ ہو گئے۔ چھٹی وکٹ سینئر بیٹسمین شعیب ملک کی گری جب وہ اپنی غلطی کی وجہ سے مارک وڈ کی گیند پر ہٹ وکٹ ہو گئے۔ انہوں نے 41 رنز کی جارحانہ اننگز کھیلی۔

کپتان سرفراز احمد 21 رنز پر ناٹ آئوٹ رہے جبکہ امام الحق ریٹائرڈ ہرٹ ہونے کے بعد دوبارہ کھیلنے آئے تو 6 سکور بنا سکے اور ناٹ آئوٹ رہے۔ پاکستان نے مقررہ اوورز میں 7 وکٹوں کے نقصان پر 340 رنز بنائے۔ انگلینڈ کی طرف سے کوران نے 4، ووڈ نے 2 اور آرچر نے ایک وکٹ حاصل کی۔

اس سے قبل ٹاس جیتنے کے بعد انگلش کپتان جوز بٹلر کا کہنا تھا کہ ٹیم میں پانچ تبدیلیاں کی گئی ہیں۔ جیمز وینس، جوفر آرچر، مارک ووڈ اور عادل راشد کو ٹیم میں شامل کیا گیا جبکہ مورگن پر پابندی کے باعث قیادت میرے پاس ہے۔

دوسری طرف قومی ٹیم کے سرفراز احمد نے بتایا تھا کہ ٹیم میں تین تبدیلیاں کی گئی ہیں۔ حارث سہیل، فہیم اشرف اور شاہین آفریدی کی جگہ شعیب ملک، محمد حفیظ اور محمد حسنین کو شامل کیا گیا ہے۔

پانچ میچوں کی سیریز کے دوران انگلینڈ کو 0-2 کی برتری حاصل ہے۔ پہلا میچ بارش کی نذر ہو گیا تھا۔ دوسرے میچ میں پاکستان ہدف کے قریب جا کر ہمت ہار بیٹھا تھا۔ تیسرے میچ میں مورگن الیون نے 359 سکور کا ہدف با آسانی حاصل کر لیا تھا جس میں جونی بیرسٹو کی شاندار سنچری بھی شامل تھی۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں