193

کشمیرکونسل کے اختیارات کشمیر حکومت کودینے کے خلاف ممبران کونسل کی اسلام آباد ہائیکورٹ میں راٹ دائر

اسلام آباد //۔ اے ایف بی مسلم کانفرنس نے پاکستان کے زیراہتمام آزاد کشمیر کو اختیارات ملنے کے خلاف کشمیر کونسل کے حوالے سے اسلام آباد ہائیکورٹ میں رٹ دائر کر دی ھے
آل جموں کشمیرمسلم کانفرنس کے ممبران کشمیر کونسل کے نام سے اسلام آباد ہائیکورٹ میں کشمیر کونسل کے اختیارات ختم کرنے کے خلاف ایک رٹ دائر کی گئی ہے جس میں تمام (6) ممبران کشمیر کونسل کو فریق بنایا گیا ہے جن میں ن لیگ کے 3، پیپلزپارٹی کے 2 اور مسلم کانفرنس کا ایک ممبر کشمیر کونسل شامل ہے۔۔۔۔یہ کیس مسلم کانفرنس کے مرکزی رہنما سردار عبدالرازق خان ایڈووکیٹ کی توسط سے دائرہ کیا گیا۔۔۔۔۔درخواست میں موقف اختیار کیا گیا ہے کہ کشمیر کونسل کا ادارہ آزاد کشمیر کے نامی گرامی سیاسی رہنماوں مجاہد اول سردار عبدالقیوم خان، غازی ملت سردار ابراہیم خان، کے ایچ خورشید اور دوسرے ریاستی قائدین کی جدوجہد سے قائم کیا گیا تھا اور اب فرد واحد کی ہٹ دھرمی کی وجہ سے ادارے کے اختیارات ختم کر کے ریاست پاکستان اور آزاد ریاست کے درمیان تعلق کو کمزور کرنے کی سازش کی جا رہی ہے جس کا قومی سلامتی پر انتہائی منفی اثر پڑیگا اوراس ساری صورتحال پر قومی سلامتی کے اداروں میں بھی تشویش پائی جا رہی ہے لہذا عدالت حکومت پاکستان کے کشمیر کونسل کے اختیارات ختم کرنے کے اقدامات کو کالعدم قرار دے۔۔۔۔
اس حوالے سے جب مسلم لیگ نون کے ممبر کشمیر کونسل سردار عبدالخالق وصی سے رابطہ کر کے انکا موقف جانا گیا تو انکا کہنا تھا کہ ن لیگ کے ممبران کشمیر کونسل کا اس رٹ سے کوئی تعلق نہیں ہے۔۔
زرائع کے مطابق رٹ کی محرک آل جموں کشمیر مسلم کانفرنس ہے۔۔۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں